سلامتی

اہم دہشت گرد رہنماؤں کی حالیہ ہلاکت نے سرحد کے ساتھ ساتھ عسکریت پسندوں میں زلزلہ برپا کر دیا ہے۔

سابق عسکریت پسندوں کا کہنا ہے کہ ان کے قائدین نے ان کی غلط رہنمائی کی اور اپنے ذاتی مفاد کے لیے انہیں جنگ کے مہروں کے طور پر استعمال کیا۔

مشاہدین اور حکام کا کہنا ہے کہ یہ آپریشن دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ایک بڑی کامیابی ہے۔

ریاض میں ہونے والی 2 ہفتوں کی خصوصی فورسز مشقیں، 25 نومبر سے 10 دسمبر تک جاری رہیں گی۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ پاکستان اور افغانستان کی سرحد کو محفوظ بنانے اور دینی علماء کو مشغول کرنے کی حکمتِ عملی بارآور ہو رہی ہے۔

کے پی انسپکٹر جنرل آف پولیس صلاح الدین محسود نے 24 نومبر کو ایک خونریز خودکش بم دھماکے میں زخمی ہونے والوں کی عیادت کی۔

حکام کا کہنا ہے کہ این اے پی اور این اے سی ٹی اے کا موثر نفاذ بہتر سیکورٹی اور دہشت گردحملوں میں کمی کے لئےکردار ادا کر رہا ہے۔

روس کی وزارتِ دفاع نے ایک ویڈیو گیم سے لی گئی تصاویر کو اس بات کے "ثبوت" کے طور پر پیش کرنے کی کوشش کی کہ امریکہ کی فوج عسکریت پسندوں کی مدد کر رہی تھی۔ سوشل میڈیا نے ماسکو کے دعوؤں کو جھوٹا ثابت کر دیا۔

ایک سابقہ عسکریت پسند نے پاکستان فارورڈ کو بتایا کہ "صلاح کاری کے عمل نے سچ کو سمجھنے میں میری مدد کی۔ اس نے میری زندگی بدل دی ہے"۔

شرکاء اور حکام کا کہنا ہے کہ ریلی، جس میں پورے پاکستان کے اندر 3،000 کلومیٹر طویل سفر شامل تھا، امید اور امن کا ایک واضح پیغام تھی۔