سلامتی

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ 2014 میں آرمی پبلک اسکول (اے پی ایس) کے قتل عام کے منصوبہ ساز کا افغانستان میں مارا جانا تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) کو بے اثر کردے گا۔

حکام کا کہنا ہے کہ صوبے نے مذہبی اقلیتوں کے تحفظ کے لیے بہت سے پروگرام شروع کیے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ پولیس کی چوکسی نے کسی بڑی دہشتگردی کے بغیر عیدالفطر کے پر امن طور پر گزرنے کو ممکن بنایا۔

جنرل راحیل شریف نے عیدالفطر میدانِ جنگ میں سپاہیوں کے ساتھ منائی، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ان کی قربانیوں کو سراہا۔

تجزیہ کاروں کا کہنا کہ عسکریت پسندی نے سماج کے تانے بانے کو تباہ کر دیا ہے اور نوجوان اس کے حل کا حصّہ بننا چاہتے ہیں۔

پاکستانی حکام نے تہوار کے لیے مساجد اور دیگر عوامی مقامات پر سخت حفاظتی انتظامات کیے ہیں۔

تقریباً 2،000 بہتر طور پر مسلح اور اچھے تربیت یافتہ جوانوں نے دہشت گردی کے خلاف لڑنے کے لیے ایف سی میں شمولیت اختیار کی ہے۔

پنجاب پولیس کے انسداد دہشت گردی محکمہ نے حالیہ کارروائیوں میں 70 عسکریت پسندوں کو ہلاک کیا ہے.

شمالی وزیرستان میں آپریشن کے 2 برسوں کے دوران دہشت گرد یہاں سے بھاگ رہے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ راستے پر روزانہ سفر کرنے والے ہزاروں مسافروں اور ٹرک ڈرائیوروں کو بہتر تحفظ فراہم کرنے کی ضرورت ہے۔