جرم و انصاف

حکومتِ پاکستان نے وفاق کے زیرِ انتظام قبائلی علاقہ جات کو خیبرپختونخوا میں ضم کرنے کے عمل کو تیز کرنے کا اشارہ دے دیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ بہتر ٹیکنالوجی اور تحقیقات اور ثبوت جمع کرنے کی مہارتیں گزشتہ دو ماہ میں 19 افراد کو سزائیں دلوانے پر منتج ہوئی ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ کھلی عدالت کا اقدام شہریوں کی شکایات سے نپٹتا ہے اور برادری کے خدشات کا فوری حل پیش کرتا ہے۔

عوام کو آگاہ کرنے اور شکایات موصول کرنے کے لیے سوشل میڈیا کے متعدد اکاوٴنٹس زیرِ استعمال ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ قانونی ہتھیاروں کا مالکان کے ڈیٹا بیس بنانے سے، جرائم اور دہشت گردی میں ہتھیاروں کے غلط استعمال کی حوصلہ شکنی کی جا سکے گی۔

پولیس 'غیرت کے نام پر قتل' کی رسم کے خلاف قوانین اور فتاویٰ کے باوجود، مبینہ طور پر قبائلی عمائدین کے حکم پر اس نام نہاد رسم کے کئی مقدمات کی تفتیش کر رہی ہے۔

اس جرگہ کے ارکان جنہوں نے مبینہ طور پر ایک 16 سالہ لڑکی سے سزا کے طور پر زیادتی کرنے کا حکم دیا تھا، کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ لڑکی کے بھائی نے اس سے پہلے 12 سالہ لڑکی سے زیادتی کی تھی۔

حکام کا کہنا ہے کہ بدعنوانی کی لعنت کا خاتمہ کرنے کے حل کا ایک حصہ نوجوانوں کی تعلیم ہے۔

تحریک طالبان پاکستان کے سابق ترجمان نے حال ہی میں سیکیورٹی اداروں کے سامنے ہتھیار ڈالے اور اپنے اعتراف میں شدت پسندوں کی مذمت کی۔

حکام کا کہنا ہے کہ بہتری سے سرمایہ کاری میں تیزی آئے گی اور اہم مقدمات حل ہوں گے۔