2017-10-05

حقوق کی پاکستانی کارکن نے انا سیاسیکووسکیا ایوارڈ جیت لیا

پاکستان فارورڈ

اسلام آباد -- ڈان نے خبر دی ہے کہ صوابی ڈسٹرکٹ سے تعلق رکھنے والی خواتین کے حقوق کی سرگرم پاکستانی کارکن کو جمعرات (5 اکتوبر) کو انا سیاسیکووسکیا ایوارڈ ملا۔ ان کے ساتھ ایوارڈ پانے والوں میں انڈیا کی قتل کی جانے والی صحافی گوری لنکیش بھی شامل ہیں۔ لنکیش کو نامعلوم قاتلوں نے ستمبر میں بنگلور، انڈیا میں گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا۔

گلالی اسماعیل کو یہ ایوارڈ لندن میں قائم آل ویم ان وار (آر اے ڈبلیو ان وار) این جی او کی طرف سے ملا ہے۔ گلالی اور ان کی بہن صباء نے 2002 میں آویئر گرلز نامی تنظیم قائم کی تھی جس کا مقصد لڑکیوں میں قائدانہ صلاحیتوں کو فروغ دینا تھا تاکہ وہ خواتین کو خودمختار بنا سکیں اور امن کی تعمیر کر سکیں۔

ڈان کے مطابق، گلالی نے آر اے ڈبلیو ان وار کی طرف سے اس اعزار کے ملنے کی خبر سننے پر کہا کہ "اپنے حقوق کے لیے آواز اٹھانا اور مذہبی انتہاپسندی کے خلاف بولنا ہمارے بنیادی حقوق میں شامل ہے"۔ توقع ہے کہ وہ اگلے سال مارچ میں لندن میں اپنا ایوارڈ وصول کریں گی۔

روسی صحافی، سیاسیکووسکیا کو ماسکو میں اکتوبر 2006 میں قتل کر دیا گیا تھا۔ آر اے ڈبلیو ہر سال انسانی حقوق کی کسی خاتون سرگرم کارکن کو یہ ایوارڈ دیتی ہے۔

کیا آپ کو یہ مضمون پسند ہے؟

Pf icons no 1

تبصرہ

* لازم خانوں کی نشاندہی کرتا ہے
Captcha

انتخاب

افغانستان میں افواج چھوڑنے کے نئے امریکی عہد کے بارے میں آپ کی کیا رائے ہے؟

نتائج