دہشتگردی

ایک پاکستانی تھنک ٹینک کا کہنا ہے داعش کا شام لبنان سرحد پر ذلت آمیز شکست کے بعد محفوظ راہداری کا معاہدہ کرنا اشارہ ہے کہ گروہ جنگ جاری رکھنے کے قابل نہیں یا جنگ جاری نہیں رکھنا چاہتا۔

انسدادِ دہشت گردی کے حکام اس بات کی تفتیش کر رہے ہیں کہ پاکستانی دہشت گرد تنظیموں میں کیوں شامل ہو رہے ہیں۔

پولیس نے عید الاضحیٰ کی تقریبات کے دوران دہشت گردی کا ایک بڑا منصوبہ ناکام بنا دیا۔

انسدادِ منشیات کی افغان وزارت کے مطابق، غیر قانونی منشیات کی تجارت سے حاصل ہونے والا تقریبا 99 فیصد منافع دہشت گرد گروہوں اور منشیات کے گروہوں کو جاتا ہے۔

مشاہدین کا کہنا ہے کہ طالبان اور داعش کے سرگرم کارکن غیر موزوں طور پر بے گناہ شہریوں کو نشانہ بناتے اور ملک کی معیشت کے نقصان پہنچاتے ہیں اور اس کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

اختتامِ ہفتہ پر کوئٹہ میں بم حملہ دہشتگرد گروہ کی جانب سے ملک کے جشنِ آزادی کی خوشیوں کو سبوتاژ کرنے کی ناکام کوشش تھی۔

پھلوں سے بھرے ٹرک میں بم نے شہر کو ہلا دیا، دو افراد ہلاک اور 30 سے زائد زخمی۔

پولیس نے اعلان کیا کہ خیبر پختونخواہ میں خدمات سر انجام دیتے ہوئے شہید ہونے والوں کے لیے امدادی پیکیج تقریبا دو گنا ہو گیا ہے۔

مشاہدین کا کہنا ہے کہ روزانہ کی بنیادوں پر علاقہ اور لڑنے والوں کو کھو دینے والا عسکریت پسند گروہ اپنی گھٹتی ہوئی طاقت سے ہاتھ پاؤن مارنے کی مایوسی بھری کوشش میں بچوں کا استعمال کر رہا ہے۔

دو درجن سے زیادہ افراد اس وقت ہلاک ہو گئے جب طالبان کے خودکش بمبار نے شہریوں سے بھری سبزی منڈی میں خود کو اڑا دیا۔