تعلیم

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی آف پشاور کا ادارہ برائے جرمیات و فرنزک سائنس جرائم اور عسکریت پسندی پر قابو پانے میں مدد کرے گا۔

حکومتِ کے پی کہنا ہے کہ عسکریت پسندی اور آفات سے متاثرہ علاقوں میں 200 مزید آ رہے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ صوبائی حکومت سب کو تعلیم دینے کے لیے پرعزم ہے۔

ایک استاد نے کہا، 'تعلیم سے اعتماد پیدا ہوتا ہے، اعتماد سے امید اور امید سے امن پیدا ہوتا ہے۔'

خیبر پختونخواہ میں 22،000 سے زائد اسکول اور 1،800 دیگر حساس عمارتیں ایمرجنسی الرٹ سسٹم سے منسلک کر دیے گئے ہیں۔

حکومت دارالعلوم حقانیہ مدرسے میں تعلیمی اصلاحات کر رہی ہے۔