https://pakistan.asia-news.com/ur/articles/cnmi_pf/newsbriefs/2017/01/17/newsbrief-02

پاکستانی اے ٹی سی نے 'غیرت کے نام پر قتل' میں ماں کو سزائے موت دے دی

اسٹاف رپورٹ

لاہور - ڈان نے خبر دی ہے کہ لاہور میں قائم انسدادِ دہشت گردی کی عدالت (اے ٹی سی) نے پیر (16 جنوری) کو ایک ماں کو اپنی بیٹی کو زندہ جلانے کے جرم میں سزائے موت سنائی۔ بیٹی نے خاندان کی مرضی کے بغیر شادی کر لی تھی۔

عدالت کو پتہ چلا کہ پروین بی بی نے اٹھارہ سالہ زینت رفیق کو جون میں لاہور میں قتل کیا تھا۔ زینت حسن خان کے ساتھ گھر سے بھاگ گئی تھی۔ اس کے خاندان نے اسے دھوکے سے گھر بلایا تھا۔

عدالت نے زینت کے بھائی کو عمر قید کی سزا سنائی۔

کیا آپ کو یہ مضمون پسند آیا
1
نہیں
تبصرے 0
تبصرہ کی پالیسی
Captcha