https://pakistan.asia-news.com/ur/articles/cnmi_pf/features/2018/05/31/feature-01
کاروبار |

تصاویر میں: مہمند ایجنسی میں سنگِ مرمر کی کان کنی

عالمگیر خان

image

مئی میں لی گئی اس تصویر میں مہمند ایجنسی میں سنگِ مرمر کے ذخائر کا حامل ایک پہاڑ دیکھا جا سکتا ہے۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں ایک خالی ٹرک ایک پہاڑ سے سنگِ مرمر لادنے جا رہا ہے۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں کارکنان ایک ٹرک میں سنکِ مرمر لاد رہے ہیں۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں ایک لوڈر ایک قریبی ٹرک کی جانب سنگِ مرمر گھسیٹ کر لے جا رہا ہے۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں کارکنان سنگِ مرمر سے ایک ٹرک بھر رہے ہیں۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں کارکنان ایک ٹرک میں سنگِ مرمر لاد رہے ہیں۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں ٹرک ایک پہاڑ سے سنگِ مرمر ایک فیکٹری کو لے جا رہے ہیں۔[عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں کارکنان ایک سنگِ مرمر کی فیکٹری پر ایک ٹرک سے مال اتار رہے ہیں۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں ایک کرین سنگِ مرمر کی ایک چٹان ایک کٹنگ مشین پر رکھ رہی ہے۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں ایک کارکن سنگِ مرمر کی ایک چٹان کو کٹتے ہوئے دیکھ رہا ہے۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں ایک فیکٹری کارکن سنگِ مرمر کو پراسیس کر رہا ہے۔ [عالمگیر خان]

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں ایک فیکٹری کارکن پراسیسڈ سنگِ مرمر کی ایک سِل اٹھائے ہوئے ہے۔ [عالمگیر خان]

image

مہمند ایجنسی میں زیارت ماربل کے مالک کے تعمیر کردہ ایک گیسٹ ہاوٴس کا مئی کا عکس یہاں دکھایا گیا ہے، جس کا بیشتر حصّہ سنگِ مرمر سے تعمیر کیا گیا ہے۔ [عالمگیر خان]

غالانئی، مہمند ایجنسی – مہمند ایجنسی میں پائے جانے والے سنگِ مرمر کا وسیع تنوع پاکستان اور دنیا بھرمیں مقبول ہے اور سنگِ مرمر کے مقامی کاروباری حکومت پر اس کاروبار کے پھیلاوٴ میں مدد کے لیے زور دے رہے ہیں۔

بائی زئی کے علاقہ میں ماربل یونین کے صدر ولی خان نے پاکستان فارورڈ سے بات کرتے ہوئے کہا، "مہمند ایجنسی میں متعدد اقسام اور رنگوں کے سنگِ مرمر پیدا ہوتے ہیں، جن میں سفید، گرے اور گلابی کے ساتھ ساتھ دیگر رنگ اور اقسام شامل ہیں۔"

مہمند ایجنسی میں 1990 میں سنگِ مرمر کی کان کنی کا آغاز ہوا، لیکن اس صنعت میں آگے بڑھنے کے لیے کان کنی کی جدید سہولیات درکار ہیں۔

image

مئی میں مہمند ایجنسی میں ایک فیکٹری کارکن سنگِ مرمر کو پراسیس کر رہا ہے۔ [عالمگیر خان]

خان نے کہا، "جدید سہولیات کا فقدان کاروبار پر اثرانداز ہو رہا ہے۔ [نکالنے کے لیے] دھماکہ خیز مواد کے استعمال کی وجہ سے ہم 80 فیصد سے زائد سنگِ مرمر ضائع کر دیتے ہیں۔"

کیا آپ کو یہ مضمون پسند آیا
3
تبصرے 3
تبصرہ کی پالیسی

مہمد ایجنسی ماربل کی اقسام بہت اچھی ہیں۔ یہ پاکستان کا اعلیٰ درجے کا ماربل ہے۔

جواب

gulab marble factory subhan khawar shabdaqr

جواب

یہ ایک شاندار اقدام ہے جناب، سنگِ مرمر کے کاروبار اور محکمہٴ معدنیات کو بھی حکومت سے متعلقہ متعدد مسائل درپیش ہیں۔

جواب