آرکائیوز برائے

منتخب شدہ

ایرانی منصوبہ سازوں نے تین ماہ میں دوسری مرتبہ طالبان کے زریعے ترکمانستان-افغانستان-پاکستان-بھارت قدرتی گیس پائپ لائن منصوبے پر حملہ کرانے کی کوشش کی ہے۔ ایران اس منصوبے کی کھل کی مخالفت کرتا ہے۔

اگلے ماہ اختیارات کی منتقلی پاکستان کی تاریخ میں دوسرا ایسا موقع ہو گا کہ منتخب حکومت نے اپنی مدت مکمل کی ہے۔

یہ تنظیم، زیادہ تر اسلام آباد اور راولپنڈی میں، 300 افراد کی امدادکرتی ہے اور پاکستان کے دیگر علاقوں میں توسیع کا ارادہ رکھتی ہے۔

مقامی باشندوں نے فوج کے عزم کا خیرمقدم کیا ہے، جسے پشتون تحفظ موومنٹ کی جانب سے حالیہ احتجاجی مظاہروں کے حل کے لیے حکومتی حکمتِ عملی کے طور پر دیکھا گیا ہے۔

یہ مسودہِ قانون اگر قانون بن گیا تو اس کے تحت کے پی کے اسکولوں میں جسمانی سزا پر جرمانے اور قید کی سزا دی جا سکے گی۔

22 اپریل کو لاہور میں پشتون تحفظ تحریک کے زیر اہتمام نکالی جانے والی ریلی میں سول سوسائٹی ممبران سمیت ہزاروں مظاہرین نے شرکت کی۔

اگرچہ کے پی میں دہشت گردی کے مقدمات میں سزائیں دینے کی شرح میں 2014 سے اضافہ ہوا ہے مگر یہ شرح 2016 میں 28 فیصد رہی جو کہ مقابلتا کم ہے۔ 50 فیصد سے زیادہ مقدمات کا نتیجہ رہائی کی صورت میں نکلا۔ نئے آلہ کا مقصد اس شرح کو بہتر بنانا ہے۔

پاک فوج نے 11 اپریل کو دیر بالا اور دیر زیریں کی سولین حکومت کو سیکیورٹی فرائض منتقل کر دیے۔

طورخم سرحدی کراسنگ پر فلیگ میٹنگ سرحد پر کچھ عرصہ پہلے مختصر جھڑپ کے بعد ہوئی ہے۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ ایسی ملاقاتیں ابلاغ کو بہتر بنائیں گی اور تناؤ کو ختم کریں گی۔

قبائلی بزرگوں اور مقامی حکام نے فوری طور پر صورتِ حال کو خراب ہونے سے روکا اور کہا کہ سرحد پر لڑائی سے صرف دہشت گردوں کو ہی فائدہ ہوتا ہے۔

کرم ایجنسی سے سبکدوش ہونے والی ایک سرکاری ملازم علی بیگم نے کہا، میرا مقصد دہشتگردی کا خاتمہ، قیامِ امن، خواتین کو عطائے اختیار اور قبائلی آبادی کو جہموریت میں داخل کرنا ہے۔

آگاہی کی ایک جاری مہم وزیرستان میں مقامی افراد کو سکھا رہی ہے کہ عسکریت پسندوں کی طرف سے پیچھے چھوڑی جانے والی آئی ای ڈیز، بارودی سرنگوں اور دیگر دھماکہ خیز آلات کو کیسے شناخت کیا جا سکتا ہے۔

موٹرسائیکلوں سے لیس آگ بجھانے کی ایک نئی سروس آگ بجھانے کے بڑے ٹرک پہنچنے تک، تنگ گلیوں میں لگنے والی آگ تک پہنچ کر اسے روک سکے گی۔

حکام نے تین افراد کو گرفتار بھی کیا ہے جن پر پاراچنار میں دہشت گرد حملوں کا شبہ ہے۔

ڈاکٹروں نے جنوری سے مفت علاج مہیا کرنا شروع کیا ہے تاکہ اس ہلاکت خیز بیماری کے پھیلاؤ سے جنگ کی جا سکے۔

حکام کا کہنا ہے کہ فاٹا اور خیبر پختونخوا کے درمیان نصب کیے گئے 31 ناکوں کا ’حلالِ سلامتی‘ دہشتگردی کے خدشات کا خاتمہ کرے گا۔

سرحد کی دونوں اطراف کے تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ دہشت گردی سے جنگ اور علاقے میں پائیدار امن کو قائم کرنے کے لیے ایک متحدہ محاذ اور مضبوط تر تعلقات ضروری ہیں۔

3 اپریل کو ایک تقریب میں کے پی پولیس کی ایلیٹ فورس کے 400 سے زائد کمانڈو فارغ التحصیل ہوئے۔

پاکستانی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہا، "میرا نہیں خیال کہ اب ٹیموں کے پاس پاکستان نہ آنے کا کوئی جواز باقی رہ گیا ہے۔"

محمد اکرم اور صغراں بی بی کو اپنے بچوں اور پوتے پوتیوں/ نواسے نواسیوں کو چھوڑنے پر مجبور ہونا پڑا تاکہ وہ مشرقی غوطہ میں روسی حمایت یافتہ متشدد حملے سے فرار ہو سکیں۔

انہوں نے کہا، "میں نے بند آنکھوں کے ساتھ سوات چھوڑا اور اب میں کھلی آنکھوں کے ساتھ واپس آ گئی ہوں۔"

تازہ ترین خبریں